میرے بارے میں

جب مجھے پامسٹری کی سمجھ آنا شروع ہوی آس وقت میری عمر ١٠ سال کی تھی۔ ایک جستجو تھی میرے اندر کہ کوی آپ کا ہاتھ دیکھ کر کیسے آپ کے بارے میں جان سکتا ہے۔


وہ رات مجھے یاد ہے، اس رات بارش ہورہی تھی اور میرے والد کے دوست اپنی فیملی کے ساتھ آے ہوئے تھے۔ وہ پامسٹری جانتے تھے۔ (یہ نام جب مجھے معلوم نہیں تھا۔) اور سب کا ہاتھ پڑھ رہے تھے۔ ایک ٨ سال کی بچی یہ سب خاموشی سے دیکھ رہی تھی۔ ( میرے ہاتھ کی لکیریں نہیں پڑھی گیں کیوں کہ میں چھوٹی تھی۔)


جس خاموشی کے ساتھ میں یہ سب دیکھ رہی تھی اسی خاموشی کے ساتھ جیب خرچی جمع کر کے کیرو کی کتاب لے آی۔ اور کالج میں آنے تک اپنے حلقے میں مشہور ہو چکی تھی۔


آج بھی پرانے ساتھی ملتے ہیں وہ میری کی ہوی پیشنگوی بتاتے ہیں کہ تم نے یہ بات صحیح بتای تھی اور میں حیران ہوتی ہوں کہ اتنی بڑی بڑی باتیں میں کیسے بتادیتی تھی۔

اگلا قدم لازمی ہے کے زاہچہ سیکھنا تھا۔ میرا زاہچہ مجھے بتاتا ہے کہ یہ علم مجھے قدرت کی طرف سے ملا ہے۔ جو میں دوبارہ اس طرف لای گی ہوں۔ میں نے اپنے راستے کا انتخاب کیا اور میں چاھتی ہوں کہ جو لوگ اس علم کو سیکھنا چاھتے ہیں یا اس علم کی مدد سے زندگی کے صیح راستے کا انتخاب کرنا چاھتے ھیں تو میرے ساتھ اس سفر میں شامل ہوسکتے ہیں۔
شکریہ۔

اولین مقصد
عملی علم نجوم کے ذریعہ سے ایک قابل اعتماد مشیر بننا ہے تا کہ علم نجوم کی رہنمای سے آپ کو مشکل حالات سے نکلنے کا طریقہ بتایا جاے اور آپ اپنی مشکلات پر اسں علم کی مدد سے قابو پاسکیں۔